پی ایس بی پشاور کے قائم مقام ڈائریکٹر کی سرکاری رولز کی خلاف ورزی ، اپنے نام سے رقم وصول کرلی

Share on facebook
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp
Share on email

پشاور… پاکستان سپورٹس بورڈ کوچنگ سنٹر پشاور کے قائم مقام ڈائریکٹر نے سپورٹس ڈائریکٹریٹ خیبر پختونخواہ سے سرکاری رولز کی خلاف ورزی کرتے ہوئے رقم اپنے نام سے وصول کرلی . جنرل فنانشل رولز )جی ایف آر( کے تحت سرکاری فنڈز کوئی بھی اہلکار اپنے نام یا اکاﺅنٹ سے نہیں لے سکتا تاہم پاکستان سپورٹس بورڈ اینڈ کوچنگ سنٹر پشاور کے قائم مقام ڈائریکٹر پرویز علی نے ایک لاکھ سے زائد رقم سپورٹس ڈائریکٹریٹ سے اپنے نام پر لی ہے.اور یہ ادائیگیاں انہیں سال 2019-20 میں کی گئی ہیں رائٹ ٹو انفارمیشن کے تحت ملنے والی معلومات کے مطابق یہ ادائیگی انہیں انڈر 21 کے مقابلوں کے دوران پی ایس بی کے ہاسٹل ، واش رومز کی مینٹیننس ، ریپئرنگ ، بیڈ اور سینٹری جو کہ ہاسٹل میں کھلاڑیوں نے استعمال کئے تھے کی مد میں سپورٹس ڈائریکٹریٹ خیبر پختونخواہ نے کی ہیں رائٹ ٹو انفارمیشن کے تحت ملنے والی رپورٹ کے مطابق تین چیک جس میں انتیس ہزار سات سو ، اٹھارہ ہزار اور اسی ہزار روپے کی ادائیگی کراس چیک کے ذریعے کی گئی اور یہ قائم مقام ڈائریکٹر پرویز علی نے اپنے نام سے وصول کئے جبکہ اس سلسلے میں سپورٹس ڈائریکٹریٹ خیبر پختونخواہ کو کہا گیا تھا کہ آفیشل اکاﺅنٹ بند ہے اوریہ رقم کراس چیک کے ذریعے قائم مقام ڈائریکٹر کو دی جائے جس پر سپورٹس ڈائریکٹریٹ خیبر پختونخواہ نے یہ رقم کراس چیک کے ذریعے پرویز علی کے نام دیدی. ائیر ہیڈ کوارٹر پشاور میں واقع پی ایس بی پشاور کا آفیشل اکاﺅنٹ موجود ہے.